تتلی جیسا نرم و نازک بچپن اور گلاب جیسی رنگین جوانی غرق ہو گئی اِس نامراد علم و جستجو میں اور آج کیا ملا کچھ بھی نہیں اپنا آپ بھی کہیں کھو بیٹھا خدا تو رہا ایک طرف اب تو اپنا آپ تک نہیں مل رہا

علم حاصل کرنے کے شوق کا تو یہ عالم تھا ہمارا کہ کتابیں اور نوٹس بیچ بیچ کر پتیسہ کھانا اولین ترجیح تھی ہماری

زندگی کے کھیل میں ہم سب اپنی اپنی پسند کی چالیں چلتیں رہتے ہیں پھر وہ وقت آتا ہے جب ہم تھک جاتے ہیں ناامیدی گھیرنے لگتی ہے اس وقت پھر وہ چال چلتا ہے اور مجھے اسی کی قسم کیا غضب کی چال چلتا ہے

I would like my life to be a statement of love and compassion--and where it isn't, that's where my work lies

وہ بھی کہتا تھا میں محبت کا پیمبر ہوں
تم سے پہلے جس نے مجھے لوٹا تھا

مجھے کاغذ کی کشتی میں بٹھا کر
وہ خود بارش کا پانی ہو گیا تھا

آج کل کی کرکٹ میں سپیڈ سے زیادہ لائن لینتھہ میٹر کرتی ہے وہاب ریاض سر ٹانگوں میں دے کر بازو گھما دیتا ہے اگے رب جانٹرے تے بیٹسمین جانٹرے