میں ایک شام جو روشن دِیا اُٹھا لایا

تمام شہر کہیں سے ہوا اٹھا لایا

یہ لوگ دَنگ تھے پہلی کہانیاں سن کر

میں ایک اور نیا واقعہ اٹھا لایا

بات بڑی نہیں ہوتی بس ضد بڑی ہو جاتی ہے۔

پاگلوں کی محفل میں..
سیانے حیران بیٹھے ہیں

شام آ رہی ہے، ڈوبتا سورج بتائے گا
تم اور کتنی دیر ہو، ہم اور کتنی دیر!!

سو بار اگر توبہ , ٹوٹی بھی تو حیرت کیا
بخشش کی روایت میں , توبہ تو بہانہ ہے.

Katt gaye darakhat magar
Tauloqe ki baat hy
Baithay rahe zameen pr prinday tamaam Raat.

تیڈے شهر دے لوک سیانڑے ھن
دل دیندے نئیں دل کڈھ گھن دن