ﻣُﻤﮑﻦ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﺏ ﻣُﻤﮑﻦ ﻧﮧ ﺭﮨﮯ
ﻣﯿﺮﺍ ﺗُـــــــﻢ ﮐﻮ ﻣُﺨﺎﻃﺐ ﮐﺮﻧﺎ

ہم جو تیرے بغیر زندہ ہیں __!
سب دکھاوا ہے دنیاداری ہے__ !

جو ریت رواج کو نہ مانے!!!
وہ عشق کہیں تو ہوتا ہو گا

دن گزرتا ہے تو لگتا ہے بڑا کام ہوا
رات کٹتی ہے تو اک معرکہ سر ہوتا ہے

میری تکمیل میں شامل ہے کچھ تیرے حصے!!______
ہم اگر تجھ سے نہ ملتے تو ادھورے رہتے!!_______

ﭼﮭﻮﭨﯽ ﺳﯽ ﻟﺴﭧ ﮨﮯ ﻣﯿﺮﯼ ﺧﻮﺍﮨﺸﻮﮞ ﮐﯽ !!!_________
ﭘﮩﻠﮯ ﺑﮭﯽ ﺗﻢ ، ﺁﺧﺮﯼ ﺑﮭﯽ ﺗﻢ!!!_______

اسی کی کوکھ سے مجرم نکل کے آتے ہیں________
شمار کیجیئے غربت کو بھی گناہوں میں________